آپ کے دَر کی عجب توقیر ہے

آپ کے دَر کی عجب توقیر ہے   آپ کے دَر کی عجب توقیر ہے جو یہاں کی خاک ہے اِکسیر ہے کام جو اُن سے ہوا پورا ہوا اُن کی جو تدبیر ہے تقدیر ہے جس سے باتیں کیں اُنھیں کا ہو گیا واہ کیا تقریرِ پُر تاثیر ہے جو لگائے آنکھ میں محبوب …

آپ کے دَر کی عجب توقیر ہے Read More »