تو امیرِ حرم میں فقیرِعجم

تو امیرِ حرم میں فقیرِعجم تو امیرِ حرم، میں فقیرِعجم تیرے گن اور یہ لب، میں طلب ہی طلب تو عطا ہی عطا، میں خطا ہی خطا تو کجا من کجا تو کجا من کجا، تو کجا من کجا تو ہے احرامِ انور باندھے ہوئے میں درودوں کی دستار باندھے ہوئے کعبۂ عشق تو، میں …

تو امیرِ حرم میں فقیرِعجم Read More »