پرُ نور ہے زمانہ صبح شبِ ولادت

پرُ نور ہے زمانہ صبح شبِ ولادت   پرُ نور ہے زمانہ صبح شبِ ولادت پرَدہ اُٹھا ہے کس کا صبح شبِ ولادت جلوہ ہے حق کا جلوہ صبح شبِ ولادت سایہ خدا کا سایہ صبح شبِ ولادت فصلِ بہار آئی شکلِ نگار آئی گلزار ہے زمانہ صبح شبِ ولادت پھولوں سے باغ مہکے شاخوں …

پرُ نور ہے زمانہ صبح شبِ ولادت Read More »