کچھ غم نہیں اگرچہ زمانہ ہو بر خلاف

کچھ غم نہیں اگرچہ زمانہ ہو بر خلاف   کچھ غم نہیں اگرچہ زمانہ ہو بر خلاف اُن کی مدد رہے تو کرے کیا اَثر خلاف اُن کا عدو اسیرِ بَلاے نفاق ہے اُس کی زبان و دل میں رہے عمر بھر خلاف کرتا ہے ذکرِ پاک سے نجدی مخالفت کم بخت بد نصیب کی …

کچھ غم نہیں اگرچہ زمانہ ہو بر خلاف Read More »