نار دوزخ کو چمن کردے بہار عارض

نارِ دوزخ کو چمن کر دے بہارِ عارض نارِ دوزخ کو چمن کر دے بہارِ عارض ظلمتِ حشر کو دِن کردے نہارِ عارض میں تو کیا چیز ہوں خود صاحبِ قرآں کو شہا لاکھ مصحف سے پسند آئی بہارِ عارض جیسے قرآن ہے ورد اُس گلِ محبوبی کا یوں ہی قرآں کا وظیفہ ہے وقارِ …

نار دوزخ کو چمن کردے بہار عارض Read More »