Bara Rabi ul Awwal Ke Din – Naat Lyrics

Bara Rabi ul Awwal Ke Din – Naat Lyrics

ربیع الاول کی نعتیں
تنم فرسودہ، جاں پارہ ز ہجراں، یا رسول اللہ ۖ
دلم پژمردہ، آوارہ ز عصیاں، یا رسول اللہ ۖ
یا رسول اللہ، آپ سے دوری کی وجہ سے میرا تن فرسودہ اور جان پارہ پارہ ہو چکی ہے اور میرا دل گناہوں کی وجہ سے مرجھایا ہوا اور آوارہ ہے (بھٹک رہا ہے)۔
چوں سوئے من گذر آری، منِ مسکیں ز ناداری
فدائے نقشِ نعلینت کنم جاں، یا رسول اللہ ۖ
اگر آپ (ص) کبھی میری طرف تشریف لائیں تو میں مسکین ناداری اور عاجزی سے آپ کے نعلینِ مبارک کے نقش پر اپنی جان قربان کر دوں۔
زجامِ حب تو مستم، با زنجیر تو دل بستم
نمی گویم کہ من ھستم سخنداں، یا رسول اللہ ۖ
آپ کی محبت کے جام سے میں مست ہوں اور میرا دل آپ کی زنجیر سے بندھا ہوا ہے، میں یہ نہیں کہتا کہ میں کوئی سخندان ہوں (یہ سب تو فقط آپ کی محبت سے ہے)۔
ز کردہ خویش حیرانم، سیاہ شد روز عصیانم
پشیمانم، پشیمانم، پشیماں، یا رسول اللہ ۖ
اپنے کیے پر میں حیران و پریشان ہوں، میرے نصیب میرے گناہوں سے سیاہ ہو چکے ہیں اور اس پر یا رسول اللہ میں پشمیان ہوں، پشیمان ہوں، پشیمان ہوں۔
چوں بازوئے شفاعت را کشائی بر گناہگاراں
مکن محروم جامی را در آں، یا رسول اللہ ۖ
یا رسول اللہ جیسے کہ آپ کے شفاعت کے بازو گناہگاروں کے لیے کھلے ہوئے ہیں تو جامی کو اس (شفاعت) سے محروم نہ کیجیئے۔
ترجمہ محمد وارث
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
جشن آمد رسول اللہ ہی اللہ
جشن آمد رسول اللہ ہی اللہ!!
بی بی آمنہ کے پھول اللہ ہی اللہ!!
جب کہ سرکار تشریف لانے لگے!
حور و غلما بھی خوشیاں منانے لگے!!
ہر طرف نور کی روشنی چھا گئی!
مصطفٰے کیا ملے زندگی مل گئی!!
اے حلیمہ تیری گود میں آ گئے!
دونوں عالم کے رسول اللہ ہی اللہ!!
چہرہء مصطفٰے جبکہ دیکھا گیا!
چھپ گئے تارے اور چاند شرما گیا!!
آمنہ دیکھ کر مسکرانے لگیں!
حرا مریم بھی خوشیاں منانے لگیں!!
آمنہ بی بی سب سے یہ کہنے لگیں!
دعاء ہو گئی قبول اللہ ہی اللہ!!
شادیانے خوشی کے بجائے گئے!
شاد کے نغمے سب کو سنائے گئے!!
ہر طرف شور صل علٰی ہوگیا!
آج پیدا حبیب خدا ہو گیا!!
پھر تو جبریل نے بھی یہ اعلان کیا!
یہ خدا کے ہیں رسول اللہ ہی اللہ!!
ان کا سایہ زمیں پر نہ پایا گیا!
نور سے نور دیکھو جدا نہ ہوا!!
ہم کو عابد نبی پر بڑا ناز ہے!
کیا بھلا میرے آقا کا انداز ہے!!
جس نے رخ پر ملی وہ شفاء پا گیا!
خاکِ طیبہ تیری دھول اللہ ہی الل
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
بن کے خیرالورٰی آ گئے مصطفٰی ہم گنہگاروں کی بہتری کیلئے
اک طرف بخششیں اک طرف جنتیں کیسے انعام ہیں امتی کیلئے
چاند دو ہو گیا جونہی انگلی اٹھی سوئے سورج نے بھی آنکھ تھی کھول دی
کھوٹی قسمت میری وہ جو کر دیں کھری کیا یہ مشکل ہے میرے نبی کیلئے
چار سو رحمتوں کی ہوائیں چلیں ہو گئی جس سے ساری فضا دل نشیں
مسکراؤ سبھی آگئے ہیں نبی غم کے مارو تمہاری خوشی کیلئے
ہلکے ہلکے جو دل میں سرور آئے ہیں بزم میں میرے آقا ضرور آئے ہیں
ہاتھ پھیلاؤ کشکول لے کر سبھی بٹ رہے ہیں کرم ہر کسی کے لئے
داتا ہجویری لاثانی مہر علی خواجہ ہندلونی میرے غوث جلی
کیسے کیسے دئیے میرے سرکار نے یہ نگینے ہمیں روشنی کے لئے
چین سے زندگانی گزر جائے گی بے کسی خود ہی موت اپنی مر جائے گی
اے شفیع امم اپنا دے دیں جو غم ہے یہ کافی مری زندگی کے لئے
جن کے لب پر رہا امتی امتی یاد ان کی نہ بھولو نیازی کبھی
وہ کہیں امتی تو بھی کہہ یانبی میں ہوں حاضر تری چاکری کے لئے
َِ۔۔؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎؎
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
ٓ———————————————————————————

محبو ب کی محفل کو محبوب سجا تے ہیں
آ تے ہیں و ہی جن کو سر کا ر بلا تے ہیں
وہ لو گ خد ا شا ہد قسمت کے سکندر ہیں
جو سر ورِ عا لم کا میلا د منا تے ہیں
سر کا ر کی رحمت کا اندا زہ نہیں جن کو
ان کو بھی میر ے آ قا سینے سے لگا تے ہیں
مے خو ارو !ذرا جا نا مے خانہ ءسرور میں
وہ جام ِ کرم ! اب بھی بھر بھر کے پلا تے ہیں
بیما ر ِ مد ینہ کا اد نٰی سا کر شمہ ہے
ہر روز مد ینہ میں ہم عید منا تے ہیں
اللہ کے خز انوں کے ما لک ہیں نبی سرور
یہ سچ ہے نیا زی ہم سرکا ر کا کھا تے ہیں
محبو ب کی محفل کو محبوب سجا تے ہیں
آ تے ہیں و ہی جن کو سر کا ر بلا تے ہیں
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

خوشی سب ہی مناتے ہیں میرے سرکار آتے ہیں
دیوانے جھوم جاتے ہیں میرے سرکار آتے ہیں
ولادت کی گھڑی آئی بہار اب جھوم کر چھائی !
وہ دیکھو آگئے آقا دیوانے دھوم مچاتے ہیں
خوشی ہے آمنہ کے گھر وہ آئے نور کے پیکر !
جو پیدا ہو کے سجدے میں سر انور کو جھکاتے ہیں
فرشتوں کی یہ سنت ہے کہ آقا کی محبت ہے
مینارو اور مکانوں پر جو جھنڈے ہم لہراتے ہیں
دہن بھی نور نور ہے، بدن بھی نور نور ہے !
نظر بھی نور نور ہے وہ نور حق کہلاتے ہیں
چراغاں کیا کریں گے تارے آ کے ان کی محفل میں
یہ تارے روشنی جن سے پاتے ہیں وہ آتے ہیں
————————————————————————————
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
———————————————————————————–

لو آگئے لو آگئے سر کار ﷺ آگئے
بگڑی بنانے سید ِابرار ﷺ آگئے
آنکھیں تھیں بند اور مقدر چمک اٹھا
آنکھوں میں دو جہان کے سردار ﷺ آگئے
دیکھا جسے تو ہو گیا اللہ کا یقیں
قدرت کا لے کے آپ وہ شاہکار آگئے
دائی حلیمہ تو نے پایا ہے وہ مقام
جھولے میں تیرے نبیوں کے سردار ﷺ آگئے
جس نے کیا ہے آن میں ظلمت گری کو دور
سرکار ﷺکے کرم سے وہ انوار ﷺ آگئے
مکے کے ریگزارو پہ بھی چھا گئی بہار
دامن میں لے کے اپنے وہ گُلزار آگئے
دیکھا رسولِ پاک ﷺ کو کفار کہہ اٹھے
صادق امین ﷺ صاحبِ کردار ﷺ آگئے
کونین کی فضاوں میں اِک نور چھا گیا
دنیا میں غم کے ماروں کے غمخوار ﷺ آگئے
میری نگاہِ شوق بھی سجدے میں گر گئی
جب سامنے وہ گنبد و مینار آگئے
میں نے کیا جو ورد درود و سلام کا
جلوہ دکھانے احمدِ مختار ﷺ آگئے
اعظم نے جب حضور کو دیکھا بروز ِ حشر
اِس کے لبوں پہ نعت کے اشعار آگئے
کلام-: محمداعظم عظیم اعظم
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جھوم کر منائیں گے آقا ﷺ کا میلاد ہم
اور سب کو دِکھائیں گے آقاﷺ کا میلاد ہم
دیکھ لینا ایک دن ایسا بھی ہوگا ضرور
سُنیں گے سُنائیں گے آقا ﷺ کا میلاد ہم
عرش پر بھی ہے خوشی فرش پر بھی ہے خوشی
سب کو یہ بتائیں گے آقا ﷺ کا میلاد ہم
جس جگہ پہ ہوتا ہے رحمتیں خدا کی ہیں
دیکھنے کو جائیں گے آقاﷺ کا میلاد ہم
کہتے ہیں فرشتے بھی جا ئیں گے ہم بھی وہاں
جس جگہ پہ پائیں گے آقاﷺ کا میلاد ہم
جو نہیں ہیں جانتے محفلِ میلاد کو
اُن کو بھی بتائیں گے آقاﷺ کا میلاد ہم
ہو گی جب دید ِ بنیﷺ دیکھ لینا ہے یقیں
حشر میں سجائیں گے آقاﷺ کا میلاد ہم
موت اعظم آئے گی محفلِ میلاد میں
دل میں لے کے جائیں گے آقاﷺ کا میلاد ہم
کلام:-محمد اعظم عظیم اعظم
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

///////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////////
نور ہی نور ہے رحمت کی گھٹا چھائی ہے
بزمِ امکاں میں نرالی چمن آرائی ہے
کیسے ؟ نہ دائی حلیمہ کا مقدر چمکے
قدمِ آقاﷺ سے گھر اُس کے بہار آئی ہے
ہو مبارک ہومبارک تمہیں اے اہلِ جہاں
چار سو آمد ِ سرور ﷺ کی صداآئی ہے
جھوم کر نعرے لگاو کہ ہے آمد اُن کیﷺ
کیف و رعنائی فضاوں میں بھی د ر آئی ہے
آج گلزاروں میں بازاروں میں رونق ہے بہت
چاند کی چاندنی بھی آج تو شرمائی ہے
جشنِ میلاد خوشی سے نہ منائیں کیوں؟کر
آپ ﷺ نے خُلد ہمارے لئے بنوائی ہے
جو کراتے تھے یہاں محفلِ ذکرِ سرور ﷺ
حشر میں اُن کی ہی بخشش کی ندا آئی ہے
واہ ! کیا ؟ خُوب ہے اعظم کے قلم کی عظمت
نامِ سرکار ﷺ سے اُس نے یہ جزاپائی ہے
کلام :-محمد اعظم عظیم اعظم
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
آمد ِ سرکار ﷺ سے پھیلی خوشبو خوشبو
دونوں جہاں نے سونگھی خوشبو خوشبو
کُوں و مکاں نے لی ہیں بلائیں
جب کے پائی خوشبو خوشبو
فرش سے لے کے عرش تلک ہے
باغِ نبی ﷺ کی خوشبو خوشبو
اِنس و جِن کیا …؟پسندِ رَب ہے
اُن کے چمن کی خوشبو خوشبو
آلِ نبی ﷺ کی شان نہ پوچھو
چار سُو پھیلی خوشبو خوشبو
کربَل بھی ہے اُن سے معتر
آج ہے پیاری خوشبو خوشبو
عشقِ نبی ﷺ کی اعظم اپنی
سانسوں میں رکھی خوشبو خوشبو
محمداعظم عظیم اعظم
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے
بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)
سرکار کی آمد مرحبا
سردار کی آمد مرحبا
آقا کی آمد مرحبا
داتا کی آمد مرحبا
حضور کی آمد مرحبا
پُرنور کی آمد مرحبا
بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

یہ آج تارے زمیں کی طرف ہیں کیوں مائل
یہ آسمان سے ہے پیہم نور کیوں نازل
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے
بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

یہ آج کیا ہے زمانے نے رنگ بدلا ہے
یہ آج کیا ہے کہ عالم کا ڈھنگ بدلا ہے
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے
بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

سرکار کی آمد مرحبا
سردار کی آمد مرحبا
آقا کی آمد مرحبا
داتا کی آمد مرحبا
حضور کی آمد مرحبا
پُرنور کی آمد مرحبا

بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

یہ آج کاہے کی شادی ہے عرش کیوں جھوما
لبِ زمیں کو لبِ آسماں نے کیوں چوما
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے

بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

رُسل انہی کا تو مژدہ سُنانے آئے ہیں
انہی کے آنے کی خوشیاں منانے آئے ہیں
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے

بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

سرکار کی آمد مرحبا
سردار کی آمد مرحبا
آقا کی آمد مرحبا
داتا کی آمد مرحبا
حضور کی آمد مرحبا
پُرنور کی آمد مرحبا

فرشتے آج جو دھومیں مچانے آئے ہیں
انہی کے آنے کی شادی رچانے آئے ہیں
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے

بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

یہ سیدھا راستہ حق کا بتانے آئے ہیں
یہ حق کے بندوں کو حق سے ملانے آئے ہیں
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے

بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

سرکار کی آمد مرحبا
سردار کی آمد مرحبا
آقا کی آمد مرحبا
داتا کی آمد مرحبا
حضور کی آمد مرحبا
پُرنور کی آمد مرحبا

سنو گے لا نہ زبانِ کریم سے نوریؔ
یہ فضے و جود کے دریا بہانے آئے ہیں
یہ کس شہنشاہِ والا کی آمد آمد ہے
یہ کون سے شہہ بالا کی آمد آمد ہے

بولو مرحبا بولو مرحبا بولو مرحبا (کورس)

سرکار کی آمد مرحبا
سردار کی آمد مرحبا
آقا کی آمد مرحبا
داتا کی آمد مرحبا
حضور کی آمد مرحبا
پُرنور کی آمد مرحبا
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سوہنے نبی دی آمد اے سوہنے نبی دی آمد اے

جیدے ورگا کوئی نیئں ہونا اس سوہنے دی آمد اے

نوری نوری چہرہ اوہدا ہے یسین دا سہرا اہدا

رحمت عالم نورِ مجسم بدرالدجیٰ دی آمد اے

تیری ستی ہوئی قسمت دائی حلیمہ جاگ اٹھی اے

تیرے کچے جئے گھر وچ ہاں نور خدا دی آمد اے

اساڈے جئے دکھیاں دا سہارا اللہ دا محبوب پیارا

عرشاں اتے جاون والے نور خدا دی آمد اے

آقا دا میلاد مناﺅ جھنڈے جھنڈیاں سارے لگاﺅ

نالے اپنے گھر وی سجاﺅ آمنہ جائے دی آمد اے

دور بلاواں کردا سوہنا امت دا دم بھر دا سوہنا

اللہ دے محبوب پیارے اُمی نبی دی آمد اے

ثاقب جس دن سوہنا آیا اس دن اچا رتبہ پایا

گھر نوں سجاﺅں خوشیاں مناﺅ سوہنے نبی دی آمد اے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

دھوم مچا دو چاروں طرف یہ کر کے تم اعلان
آج آئے دنیا میں ہیں نبیوں کے سلطان

بارہ ربیع الاول کے دن آقا آئے دنیا میں
ان کی آمد پر رحمت کے بادل چھائے دنیا میں
جشن مناﺅ تم آقا کا خوش ہو گا رحمان

کعبے نے ہے سلامی دی سب نبیوں کے سردار کو
امت کو جو جان سے پیارا اس امت کے غمخوار کو
جشن منا کے کر لو سب تم بخشش کا سامان

آمد کے دن سب دنیا پر ابر کرم کا چھایا تھا
دائی حلیمہ نے آکر آقا کو سینے لگایا تھا
دائی حلیمہ تیرے مقدر پر ہم سب قربان

آمد کی ہے دھوم مچا کے گیت نبی کے گاﺅ بھی
جھنڈے اور جھنڈیاں لگا کر اپنے گھر کو سجاﺅ بھی
آقا کا ہے مدح خوان یارو خود رحمان

آقا کی آمد پر سارے ابر کرم کے چھائے
ثاقب تیری حیثیت کیا ہے جو گیت نبی کے گائے
آقا کا تو مدح خوان ہے رب کا سارا قرآن
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

سوہنے آقا آئے نے رحمت نال لیائے نے
سارے عالم دے وچ ویکھو نور دے بدل چھائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہنور دے نال بھر گیا اے آمنہ بی بی دا گھر
حوراں وی جنت چوں آکے نوری نغمے گائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہسارے عالم دے وچ دھوم آقا دے میلاد دی
عاشقاں وی رل مل کے میلاد دے جشن منائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہآقا دی آمد تے لائے رب نے جھڈے کعبے تے
سنیاں نے وی رل مل سارے جھنڈے جھنڈیاں لائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہآقا دی آمد تے جھکیا کعبہ وی سجدے دے وچ
فلکاں توں ملکاں نے آکے نوری سہرے گائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہدتی گواہی کنکراں بت پئے سجدے دے وچ
پیارے آقا کول آکے شجراں سیس نوائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہیا رسول اللہ دے نعرے نال سانوں پیار اے
اس نعرے نے سب دے یارو ڈبدے پار لگائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہثاقب جس دی دھم مچی اے سب جہاناں دے اندر
اللہ دے محبوب پیارے آمنہ بی دے جائے نے

الصلوة والسلام و علیک یا رسول اللہ الصلوة والسلام علیک یا حبیب اللہ

ہو مبارک اہل ایماں عید میلاد النبی
ہو گئی قسمت درخشاں عید میلاد النبی

خوب خوش ہیں حور و غلماں عید میلاد النبی
اور فرشتے بھی ہیں شاداں عید میلاد النبی

چار سُو ہیں کیا چھما چھم رحمتوں کی بارشیں
جھومتے ہیں ابرِ باراں عید میلاد النبی

نور کی پھوہار برسی چار سو ہے روشنی
ہو گیا گھر گھر چراغاں عید میلاد النبی

چار جانب دھوم سرکار کی میلاد کی
جھومتا ہے ہر مسلماں عید میلاد النبی

عرش پر چاروں طرف صل علٰی کی دھوم ہے
آ گئے ہیں نور یزداں عید میلاد النبی

غنچے چٹکے پھول مہکے ہر طرف آئی بہار
ہو گئی صبح بہاراں عید میلاد النبی

جانتے ہو کیوں ہے روشن آسماں پر کہکشاں
ہے کیا حق نے چراغاں عید میلاد النبی

ہم نہ کیوں روشن کریں گھر گھر دئیے میلاد کے
خود کرے جب حق چراغاں عید میلاد النبی

عید میلاد النبی تو عید کی بھی عید ہے
بالیقیں ہے عید عیداں عید میلاد النبی

عید میلاد النبی پر جو بھی کرتا ہے خوشی
اس پہ غراتا ہے شیطاں عید میلاد النبی

آمنہ کے گھر محمد کی ولادت ہو گئی
خوب جھومو اہل ایماں عید میلاد النبی

آؤ دیوانو چلو سب آمنہ کے گھر چلیں
نور سے بھر لائیں داماں عید میلاد النبی

خوب جھومو اے گنہگارو ! تمہاری عید ہے
ہو گیا بخشش کا ساماں عید میلاد النبی

غم کے مارو ! بے سہارو ! بس تمہاری عید ہے
ہو گیا راحت کا ساماں عید میلاد النبی

بیقرارو ! دلفگارو ! بس تمہاری عید ہے
کیوں ہو حیران و پریشاں عید میلاد النبی

غم نصیبو ! بس غموں کا دور اندھیرا ہو گیا
تم مناؤ خوب خوشیاں عید میلاد النبی

کھول اٹھے مرجھائے دل اور جان میں جان آ گئی
آ گئے ہیں جان جاناں عید میلاد النبی

بے کسوں کے دن پھرے اور غم کے مارے ہنس پڑے
ہو گیا خوشیوں کا ساماں عید میلاد النبی

انشاءاللہ آج عیدی میں ملے گی مغفرت
ہے جبھی شیطاں پریشاں عید میلاد النبی

یانبی ! اپنی ولادت کی خوشی میں اپنا غم
دیجئے طیبہ کے سلطاں عید میلاد النبی

عید میلاد النبی کا واسطہ عطار کو
بخش دے مولائے رحماں عید میلاد النبی

،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،

سحاب رحمت باری ہے بارھویں تاریخ
کرم کا چشمہ ء جاری ہے بارھویں تاریخ

ہمیں تو جان سے پیاری ہے بارھویں تاریخ
عدو کے دل کو کٹاری ہے بارھویں تاریخ

اسی نے موسم گل کو کیا ہے موسم گل
بہار فصل بہاری ہے بارھویں تاریخ

بنی ہے سرمہ چشم بصیرت و ایماں
اٹھی جو گرد سواری ہے بارھویں تاریخ

ہزار عید ہوں ایک ایک لحظ پر قرباں
خوشی دلوں پہ وہ طاری ہے بارھویں تاریخ

فلک پہ عرش بریں کا گمان ہوتا ہے
زمین خلد کی کیاری ہے بارھویں تاریخ

تمام ہو گئی میلاد انبیاء کی خوشی
ہمیشہ اب تری باری ہے بارھویں تاریخ

دلوں کے میل دھلے گل کھلے سرور ملے
عجیب چشمہ ء جاری ہے بارھویں تاریخ

چڑھی ہے اوج پہ تو تقدیر خاکساروں کی
خدا نے جب سے اتاری ہے بارھویں تاریخ

خدا کے فضل سے ایمان میں ہیں ہم پورے
کہ اپنی روح میں ساری ہے بارھویں تاریخ

ولادت شہ دیں ہر خوشی کی باعث ہے
ہزار عید سے بھاری ہے بارھویں تاریخ

ہمیشہ تو نے غلاموں کے دل کئے ٹھنڈے
جلے جو تجھ سے وہ ناری ہے بارھویں تاریخ

خوشی ہے اہل سنن میں مگر عدو کے یہاں
فغان و شیون و زاری ہے بارھویں تاریخ

جدھر گیا سنی آواز یا رسول اللہ
ہر ایک جگہ اسے خواری ہے بارھویں تاریخ

عدو ولادت شیطاں کے دن منائے خوشی
کہ عید عید ہماری ہے بارھویں تاریخ

حسن ولادت سرکار سے ہوا روشن
مرے خدا کو بھی پیاری ہے بارھویں تاریخ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
مومنو وقت ادب ہے آمد محبوب رب ہے
آداب و طرب ہے آمد شاہ عرب ہے

غنچے چٹکے پھول مہکے شاخ گل پر مرغ چہکے
روتا ہے شیطان یہ کہہ کر آمد شاہ عرب ہے

خواہش زلف نبی میں مست ہیں گل کی شمیمیں
جھوم کر آئیں تسنیمیں آمد شاہ عرب ہے !

بدلیاں رحمت کی چھائیں بوندیاں رحمت کی آئیں
اب مرادیں دل کی پائیں آمد شاہ عرب ہے

بج رہے ہیں شادیانے بت لگے کلمہ سنانے
ہر زباں پہ ہیں ترانے آمد شاہ عرب ہے !

ابر رحمت چھا گیا ہے کعبہ پہ جھنڈا گڑا ہے
باب رحمت آج وا ہے آمد شاہ عرب ہے !

آنے والا ہے وہ پیارا دونوں عالم کا سہارا
کعبے کا چمکا ستارہ آمد شاہ عرب ہے

آتا ہے شاہ حکومت فرض ہے جس کی اطاعت
ہر نبی نے دی بشارت آمد شاہ عرب ہے !

اٹھو آیا تاج والا عرش کی آنکھوں کا تارا !
سب کہو اے ماہ طیبہ صلوٰات اللہ علیک

یانبی سلام علیک یارسول سلام علیک
یاحبیب سلام علیک صلوٰات اللہ علیک

آمنہ بی بی کا جایا بارہویں تاریخ آیا !
صبح صادق نے سنایا صلوٰات اللہ علیک

السلام اے جان عالم السلام ایمان عالم !
شاہ دیں سلطان عالم صلوٰات اللہ علیک

السلام اے شاہ عالی السلام امت کے والی !
عرض کرتے ہیں سوالی صلوٰات اللہ علیک

ناؤ کے تم ناخدا ہو خلق کے مشکل کشا ہو !
سب کے تم حاجت روا ہو صلوٰات اللہ علیک

بخش دو میری خطائیں دور ہوں غم کی گھٹائیں
بھیج دو اپنی عطائیں صلوٰات اللہ علیک

کفر کو تم نے مٹایا خاک میں اس کو ملایا !
دین کا ڈنکا بجایا صلوٰات اللہ علیک

اب تو طیبہ میں بلا لو حسرتیں دل کی نکالو !
اپنے بد کو بھی نبھا لو صلوٰات اللہ علیک

دل میں رنگ اپنا جما دو پردہء غفلت ہٹا دو
بخت خوابیدہ جگا دو صلوٰات اللہ علیک

جان نکلے اس طرح سے آپ کا در ہو میرا سر
سامنے ہو قبر انور صلوٰات اللہ علیک

جانکنی کے وقت آنا کلمہ طیب سکھانا
چہرہء انور دکھانا صلوٰات اللہ علیک

اے شفیع روز محشر ہیں سیاہ عصیاں سے دفتر
غوث کا صدقہ کرم کر صلوٰات اللہ علیک

کچھ نہ کی ہم نے کمائی عمر سب یوں ہی گنوائی
اے عرب والے دہائی صلوٰات اللہ علیک

حشر میں تم بخشوانا اپنے دامن میں چھپانا
ہر مصیبت سے بچانا صلوٰات اللہ علیک

اے شہنشاہ رسالت ہیں یہاں جو اہلسنت
تا ابد سب پر ہو رحمت صلوٰات اللہ علیک

دین کا ہو بول بالا سنیوں کا رخ اجالا !
دشمنوں کا منہ ہو کالا صلوٰات اللہ علیک

اس جمیل قادری پر ہو کرم محبوب داور
چشم و دل کر دو منور صلوٰات اللہ علیک
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
آمد مصطفٰے سے ہے پھولا پھلا چمن چمن

آمد مصطفٰے سے ہے پھولا پھلا چمن چمن
آئی بہار ہر طرف کھلنے لگا چمن چمن

شادی ہے ہر مقام میں نخل ہیں سب قیام میں
ڈالیاں ہیں سلام میں سر ہے جھکا چمن چمن

ٹھنڈی ہوائیں آتی ہیں کلیاں بھی مسکراتی ہیں
بلبلیں چہچہاتی ہیں کھلنے لگا چمن چمن

جھومتا ہے شجر شجر تازہ ہوا ہے پھول پھول
سبزہ ہوئی روش روش گل سے بھرا چمن چمن

کلیاں تمام کھل گئیں شاخیں خوشی سے ہل گئیں
بلبلیں گل سے مل گئیں ہنسنے لگا چمن چمن

نعت میں قیل و قال ہو مدحتِ ذوالجلال ہو
اکبرِ خوش مقال ہو نغمہ سرا چمن چمن
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جشن آمد رسول اللہ ہی اللہ!!

جشن آمد رسول اللہ ہی اللہ!!
بی بی آمنہ کے پھول اللہ ہی اللہ!!

جب کہ سرکار تشریف لانے لگے!
حور و غلما بھی خوشیاں منانے لگے!!
ہر طرف نور کی روشنی چھا گئی!
مصطفٰے کیا ملے زندگی مل گئی!!
اے حلیمہ تیری گود میں آ گئے!
دونوں عالم کے رسول اللہ ہی اللہ!!

چہرہء مصطفٰے جبکہ دیکھا گیا!
چھپ گئے تارے اور چاند شرما گیا!!
آمنہ دیکھ کر مسکرانے لگیں!
حرا مریم بھی خوشیاں منانے لگیں!!
آمنہ بی بی سب سے یہ کہنے لگیں!
دعاء ہو گئی قبول اللہ ہی اللہ!!

شادیانے خوشی کے بجائے گئے!
شاد کے نغمے سب کو سنائے گئے!!
ہر طرف شور صل علٰی ہوگیا!
آج پیدا حبیب خدا ہو گیا!!
پھر تو جبریل نے بھی یہ اعلان کیا!
یہ خدا کے ہیں رسول اللہ ہی اللہ!!

ان کا سایہ زمیں پر نہ پایا گیا!
نور سے نور دیکھو جدا نہ ہوا!!
ہم کو عابد نبی پر بڑا ناز ہے!
کیا بھلا میرے آقا کا انداز ہے!!
جس نے رخ پر ملی وہ شفاء پا گیا!
خاکِ طیبہ تیری دھول اللہ ہی اللہ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

نبی کا جھنڈا لے کر نکلو دنیا پر چھا جاؤ
نبی کا جھنڈا امن کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

خلد میں ہوگا ہمارا داخلہ اس شان سے
یارسول اللہ کا نعرہ لگاتے جائیں گے
یارسول اللہ کے نعرہ سے ہم کو پیار ہے
جس نے یہ نعرہ لگایا اس کا بیڑہ پار ہے
خاک ہو جائیں عدو جل کر مگر ہم تو رضا
دم میں جب تک دم ہے ذکر ان کا سناتے جائیں گے
حشر تک ڈالیں گے ہم پیدائش مولا کی دھوم
مثل فارس نجد کے قلعے گراتے جائیں گے
نعت خوانی موت بھی ہم سے چھڑا سکتی نہیں
قبر میں بھی مصطفٰی کے گیت گاتے جائیں گے
تم بھر کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

یاحبیب کبریا اھلاً و سھلاً مرحبا
مصطفٰی و مجتبٰی اھلاً و سھلاً مرحبا
آگئے خیرالورٰی اھلاً و سھلاً مرحبا
آئے شاہ انبیاء اھلاً و سھلاً مرحبا
تم بھی کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

مومنو وقت ادب ہے آمد محبوب رب ہے
جائے آداب و طرب ہے آمد شاہ عرب ہے
تاجدار انبیاء اھلاً و سھلاً مرحبا
مظہر رب العلٰی اھلاً و سھلاً مرحبا
آمنہ کے دلربا اھلاً و سھلاً مرحبا
اے حلیمہ کے پیا اھلاً و سھلاً مرحبا
تم بھی کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

بدلیاں رحمت کی چھائیں بوندیاں رحمت کی آئیں
اب مرادیں دل کی پائیں آمد شاہ عرب ہے
تاجدار انبیاء اھلاً و سھلاً مرحبا
مرسلیں کے پیشواء اھلاً و سھلاً مرحبا
تم بھی کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

ابر رحمت چھا گیا ہے کعبہ پہ جھنڈا گڑا ہے
باب رحمت آج وا ہے آمد شاہ عرب ہے
یا شہ ارض و سما اھلاً و سھلاً مرحبا
سرور ہر دوسرا اھلاً و سھلاً مرحبا
تم بھی کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا گھرگھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

آنے والا ہے وہ پیارا دونوں عالم کا سہارا
کعبے کا چمکا ستارا آمد شاہ عرب ہے
خلق کے حاجت روا اھلاً و سھلاً مرحبا
اے میرے مشکل کشا اھلاً و سھلاً مرحبا
تم بھی کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

بیت اقصٰی باب کعبہ بر مکان آمنہ
نصب پرچم ہو گیا اھلاً و سھلاً مرحبا
چاند سا چمکاتے چہرہ نور برساتے ہوئے
آگئے بدرالدجٰی اھلاً و سھلاً مرحبا
آمنہ کے گھر میں آقا کی ولادت ہو گئی
مرحبا صل علٰی اھلاً و سھلاً مرحبا
جھک گیا کعبہ سبھی بت منہ کے بل اوندھے گرے
دبدبہ آمد کا تھا اھلاً و سھلاً مرحبا
سوئی قسمت جاگ اٹھی اور سب کی بگڑی بن گئی
باب رحمت وا ہوا اھلاً و سھلاً مرحبا
آتے ہی سجدے میں گر کر رب ہبلی امتی
عرض حق سے کر دیا اھلاً و سھلاً مرحبا
خوب جھوموں عاصیوں وہ مسکراتے آگئے
شافع روز جزاء اھلاً و سھلاً مرحبا
تم بھی کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ

قبر میں عطار کی آمد ہو جب سرکار کی
ہو زباں پر یاخدا اھلاً و سھلاً مرحبا
حشر میں عطار ان کو دیکھتے ہی بول اٹھے
مرحبا یا مصطفٰی اھلاً و سھلاً مرحبا
تم بھی کرکے ان کا چرچا اپنے دل چمکاؤ
اونچے میں اونچا نبی کا جھنڈا
عظمتوں والا نبی کا جھنڈا
رفعتوں والا نبی کا جھنڈا
برکتوں والا نبی کا جھنڈا
سب سے پیارا نبی کا جھنڈا
سب سے نرالا نبی کا جھنڈا گھر گھر میں لہراؤ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
پکارو یارسول اللہ یاحبیب اللہ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
گونجتی ہے ہر طرف “ہاں“ صدائیں مرحبا

وہ آئے مصطفٰے وہ آئے مصطفٰے
گونجتی ہے ہر طرف “ہاں“ صدائیں مرحبا

مبارک ہو نبی الانبیاء تشریف لے آئے
مبارک ہو شہہ مشکل کشا تشریف لے آئے

مبارک ہو کہ محبوب خدا تشریف لے آئے
مبارک ہو محمد تشریف لے آئے

سراپا جگمگاتے کبریا نے جلوہ فرمایا
سراپا پیکر نورِ خدا نے جلوہ فرمایا

حبیب خالق ارض و سما نے جلوہ فرمایا
میری جاں مالکِ ہر دوسرا نے جلوہ فرمایا

میرے آقا میرے سرور میرے سردار آپہنچے
میرے مولا، میرے رہبر، میرے سرکار آپہنچے

میرے ہادی میرے کونین کے مختار آ پہنچے
شہنشاہ رسل آئے شہہ ابرار آ پہنچے

مبارک ہو یتیموں کو فقیروں کو مبارک ہو
مبارک ہو غریبوں کو غلاموں کو مبارک ہو

مبارک بے کسوں کو پیاس و پُرسوں کو مبارک ہو
مبارک بے کسوں کو بے نواؤں کو مبارک ہو

چراغِ بزم امکاں رونق دنیا و دیں آئے
وہ شمع لامکاں وہ زینتِ عرش بریں آئے

انیس الھالکین، راحت العالشقین آئے
شفیع المذنبیں، رحمۃ اللعالمین آئے

سلاطینِ زمانہ دامنِ امید پھیلائیں
حضور شیخِ سرفرزانِ عالم التجا لائیں

خبر دو تاجدارو کہو سلامی کیلئے آئیں
شہنشاہوں سے کہدو “ہاں“ مبارکبادیاں لائیں
،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
صلی علٰی پڑھو

صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

خوشیاں مناؤ بھائیو سرکار آگئے
سرکار آگئے شہہ ابرار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

سب جھوم جھوم کر کہو سرکار آگئے
دونوں جہاں کے مالک و مختار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

وہ مسکراتے خلق کے سردار آگئے
چمکاتے اپنا چہرہ چمکدار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

ہے چارجانب آج جشن آمد رسول
دنیا میں آج نبیوں کے سالار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

دائی حلیمہ میں تیری تقدیر پر نثار
گودی میں تیری احمد مختار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

خوشیوں کے لمحات آگئے دیوانے جھوم اٹھے
عیدوں کی عید آگئی سرکار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

پڑھتے ہوئے درود اب تعظیم کو اٹھو
اٹھ کر پڑھو سلام سب سرکار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

لہراؤ سبز پرچم اے اسلامی بھائیو
گھر گھر کرو چراغاں سب سرکار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

ہوتے ہی پیدا رب ھبلی امتی کہا
امت کی مغفرت کے طلبگار آگئے
اے غمزدو تمہاری تو بس عید ہوگئی
آفت زدو تمہارے مددگار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

پھولے نہیں سماتے ہیں عطار آج تو
دنیا میں آج آقائے عطار آگئے
صل علٰی صل علٰی صل علٰی پڑھو

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: