تصور لطف دیتا ہے دہانِ پاک سرور کا

تصور لطف دیتا ہے دہانِ پاک سرور کا   تصور لطف دیتا ہے دہانِ پاک سرور کا بھرا آتا ہے پانی میرے منہ میں حوضِ کوثر کا جو کچھ بھی وصف ہو اُن کے جمالِ ذرّہ پرور کا مرے دیوان کا مطلع ہو مطلع مہرِ محشر کا مجھے بھی دیکھنا ہے حوصلہ خورشید محشر کا …

تصور لطف دیتا ہے دہانِ پاک سرور کا Read More »