bahare gulshane ahmed raza akhtar raza tum ho

 

 

بہارِ گلشنِ احمد رضا اختر رضا تم ہو
تمھی قائم مقامِ مصطفیٰ اختر رضا تم ہو

یقیناً آفتابِ پُرضیا اختر رضا تم ہو
جمالِ غوثیت کا آئنہ اختر رضا تم ہو

تمھی تاج الشریعہ ہو تمھی بدرالطریقہ ہو
امیرِ قافلہ میرے پیا اختر رضا تم ہو

تمھی ہو حُجَّتِ اسلام کی تحقیق کے وارث
شہِ نوری کا زہد و اِتّقا اختر رضا تم ہو

تمھی ہو پاسبانِ دینِ حق کے ملجہ و ماویٰ
جہانِ سنیّت کے بادشہ اختر رضا تم ہو

تمہاری ذات سے اہلِ سنن کو ہے بقا حاصل
دلِ اسلام کی سچی دعا اختر رضا تم ہو

دلوں کے کارواں اور قافلے چلتے ہوے دیکھے
دلوں پہ راج ہے وہ دلربا اختر رضا تم ہو

حَسیں چہرہ حسیں گیسو حسیں آنکھیں حسیں ابرو
ہزاروں خوبی کا اک گل کدا اختر رضا تم ہو

تمھی ہو زیبِ سجادہ شہنشاہِ بریلی کے
عُلومِ اعلیٰ حضرت کی ضیا اختر رضا تم ہو

اویسِ قرنی یعنی کَوکبِ جیلانی کہتا ہے
کہ میری حسرتوں کی انتہا اختر رضا تم ہو

(کلامِ سید محمد اویس قادری کوکب جیلانی)

 

 

بہارِ گلشنِ احمد رضا اختر رضا تم ہو
تمھی قائم مقامِ مصطفیٰ اختر رضا تم ہو

یقیناً آفتابِ پُرضیا اختر رضا تم ہو
جمالِ غوثیت کا آئنہ اختر رضا تم ہو

تمھی تاج الشریعہ ہو تمھی بدرالطریقہ ہو
امیرِ قافلہ میرے پیا اختر رضا تم ہو

تمھی ہو حُجَّتِ اسلام کی تحقیق کے وارث
شہِ نوری کا زہد و اِتّقا اختر رضا تم ہو

تمھی ہو پاسبانِ دینِ حق کے ملجہ و ماویٰ
جہانِ سنیّت کے بادشہ اختر رضا تم ہو

تمہاری ذات سے اہلِ سنن کو ہے بقا حاصل
دلِ اسلام کی سچی دعا اختر رضا تم ہو

دلوں کے کارواں اور قافلے چلتے ہوے دیکھے
دلوں پہ راج ہے وہ دلربا اختر رضا تم ہو

حَسیں چہرہ حسیں گیسو حسیں آنکھیں حسیں ابرو
ہزاروں خوبی کا اک گل کدا اختر رضا تم ہو

تمھی ہو زیبِ سجادہ شہنشاہِ بریلی کے
عُلومِ اعلیٰ حضرت کی ضیا اختر رضا تم ہو

اویسِ قرنی یعنی کَوکبِ جیلانی کہتا ہے
کہ میری حسرتوں کی انتہا اختر رضا تم ہو

(کلامِ سید محمد اویس قادری کوکب جیلانی)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.