Rab Se Guftagu Karna Lyrics

 

 

Jo Tum Ghamgeen Ho Jao To Rab Se Guftagu Karna

Bahareñ Laut Aayeñgi, Khazañ Meiñ Justju Karna

 

Sajao Khwab Aañkhoñ Meiñ Ye Dil Aaraasta Karlo

Hatega Ghaar Se Patthar Khuda Se Raabta Rakho,

Wo Maaoñ Se Kahiñ Badh Kar Mohabbat Karne Wala Hai

Hameñ Tanha Na Chhodega Dua Ka Silsila Rakho.

 

Jo Tum Ghamgeen Ho Jao To Rab Se Guftgu Karna

Bahareñ Laut Aayeñgi Khazañ Meiñ Justju Karna.

 

Agar Buniyad Ho Khaalis Amal Har iK Amar Hoga

Shajar Ko Sabra Se Paalo Tabhi Shireen Samar Hoga,

Thaka Do Jism Mehnat Se, Yaeeiñ Rakho Duaoñ Mein

Tumhara Naam Fahristoñ Mein Manzoor-e-Nazar Hoga.

 

Jo Tum Ghamgeen Ho Jao To Rab Se Guftgu Karna

Bahareñ Laut Aayeñgi Khazañ Meiñ Justju Karna.

 

Agar Tum Khushk Hotoñ Se Wafa Ke Geet Gaao ge

Shakista Qaafile Mein Tum Fatah Ki Reet Laao ge,

Chale Jaaoge Sehra Mein Nahiñ Dhuñdhoge Saaye Tum

Vo Din Aaega Bil-Aakhir Ke Jab Tum Jeet Jaaoge.

 

Jo Tum Ghamgeen Ho Jao To Rab Se Guftgu Karna

Bahareñ Laut Aayeñgi Khazañ Meiñ Justju Karna

 

Adaaye-Johd Paiham Jinke Mann Meiñ Doob Jaati Hai

Khudi Baisaakhiyoñ Ke Bin Jinheñ Chalna Sikhati Hai,

Wo Jin Ki Chahteñ Jalwadeñ Sahil Pe Safinoñ Ko

Lapak Kar Kaamyaabi Unki Paa-Bosi Ko Aati Hai.

 

Jo Tum Ghamgeen Ho Jao To Rab Se Guftgu Karna

Bahareñ Laut Aayeñgi Khazañ Meiñ Justju Karna

 

Jo Tum Ghamgeen Ho Jao Lyrics In Urdu

 

جو تم غم گین ہو جاؤ تو رب سے گفتگو کرنا

بہاریں لوٹ آئیں گی خزاں میں جستجو کرنا

 

سجاؤ خواب آنکھوں میں میں یہ دل آراستہ رکھو

ہٹےگا غار سے پتھر خدا سے رابطہ رکھو

وہ ماؤں سے کہیں بڑھ کر محبت کرنے والا ہے

تمہیں تنہا نہ چھوڑے گا دعا کا سلسلہ رکھو

 

جو تم غم گین ہو جاؤ تو رب سے گفتگو کرنا

بہاریں لوٹ آئیں گی خزاں میں جستجو کرنا

 

اگر بنیاد ہو خالص عمل ہر اک امر ہوگا

شجر کو صبر سے پالو تبھی شیریں ثمر ہوگا

تھکا دوں جسم محنت سے، یقیں رکھو دعاؤں میں

تمہارا نام فہرستوں میں منظورِ نظر ہو گا

 

جو تم غم گین ہو جاؤ تو رب سے گفتگو کرنا

بہاریں لوٹ آئیں گی خزاں میں جستجو کرنا

 

اگر تم خشک ہوٹوں اسے وفا کے گیت گاؤ گے

شکستہ قافلے میں تم فتح کی ریت لاؤ گے

چلے جاؤ گے صحرا میں نہیں ڈھونڈو گے سائے تم

وہ دن آئے گا بالآخر کہ جب تم جیت جاؤ گے

 

جو تم غمگین ہوجاؤ تو رب سے گفتگو کرنا

بہاریں لوٹ آئیں گی خزاں میں جستجو کرنا

 

ادائے جہدِ پیہم جن کے من میں ڈوب جاتی ہے

خودی بیساکھیوں کے بن جنہیں چلنا سکھاتی ہے

وہ جن کی چاہتیں جلوا دیں ساحل پہ سفینوں کو

لپک کر کامیابی ان کی پابوسی کو آتی ہے

 

جو تم غمگین ہوجاؤ تو رب سے گفتگو کرنا

بہاریں لوٹ آئیں گی خزاں میں جستجو کرنا

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.